Ae Jaan e Jahan Arzoo e Roey Tu Daram

Ae Jaan e Jahan Arzoo e Roey Tu Daram
Dar Sar Hawas e Qamat e Dil Joey Tu Daram

اے جانِ جہاں آرزوئے روئے تو دارم
در سر ہوسِ قامتِ دلجوئے تو دارم

اے جان جہاں آپ کے چہرے کی زیارت کا مشتاق ہوں
میری بزم خیال میں آپ کی سروقدی کا نشہ ہر وقت چھایا رہتا ہے

در کعبہ و در صومعہ در دیروخرابات
ہرجا کہ روم دیدہ دل سوئے تو دارم

کعبہ ، کلیسا ، گرجا اور شراب خانے میں ہر جگہ
جہاں بھی جاتا ہوں میرا دل آپ کی محبت میں سرشار رہتا ہے

حاجی بہ طوافِ حرم کعبہ رود لیک
من کعبہ مقصود سِر کوئے تو دارم

حاجی حرم کعبہ کے طواف کے لئے جاتا ہے لیکن
میرا قبلہ و کعبہ آپ کا سنگ آستاں ہے

اندرصف طاعت چُوں بہ مسجد بہ نشستم
دل مائل محراب دو ابروئے تو دارم

جب بھی میں عبادت کی نیت سے مسجد میں بیٹھتا ہوں
میرے دل کا رجوع آپ کے دونوں ابرووں کی طرف ہوتا ہے

ہرجا کہ رود قطبِ دیں آید بہرِتو باز
چوں رشتہ دل بستہ بہر موئے تو دارم

جہاں کہیں بھی قطب دیں جاتا ہے آپ ہی کے لئے جاتا ہے
کیونکہ اُس کا دل تو آپ کی زلف سیاہ کا اسیر ہے

Hazrat Qutbuddin Bakhtiar Kaki
ؒحضرت قطب الدین بختیار کاکی

 

3 thoughts on “Ae Jaan e Jahan Arzoo e Roey Tu Daram

  1. Please keep updating new kalam soon i been waiting for long time for something new… and a suggestion install disqus comment system it will be really helpfull

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *