Edhar Daikhta Houn Udhar Daikhta Houn

Edhar Daikhta Houn Udhar Daikhta Houn
Tujhey Daikhta Houn Jidhar Daikhta Houn

اِدھر دیکھتا ہُوں اُدھر دیکھتا ہُوں
تُجھے دیکھتا ہُوں جدھر دیکھتا ہُوں

پہنچ کر سرِ منزل یار دیکھو
رواں خود کو بہر سفر دیکھتا ہُوں

وہ میری نظر میں سمائے ہیں ایسے
جہاں سارا عکسِ نظر دیکھتا ہوں

کوئی مجھ کو سمجھائے یارو کہاں ہُوں
نہ در دیکھتا ہُوں نہ گھر دیکھتا ہوں

میں جب دیکھتا ہوں نہیں خود کو پاتا
کسی کی نظر کا اثر دیکھتا ہوں

یہی تو نہیں اُستوائے علی العرش
برابر اُسے جلوہ گر دیکھتا ہُوں

نظامی خُدا کی قسم میں نہیں ہُوں
اُسے از قدم تا بسر دیکھتا ہوں

امانت علی شاہ چشتی نظامی
Amant Ali Shah Chishti Nizami

                                     https://www.facebook.com/AbulHaqaiqNizami