Gul Az Rukhat Aamokhta Nazuk Badani Ra Badani Ra

Gul Az Rukhat Aamokhta Nazuk Badani Ra Badani Ra
BulBul ze tu AaMokhta Shireen Sukhani Ra, Sukhani Ra

ﮔﻞ ﺍﺯ ﺭﺧﺖ ﺁﻣﻮﺧﺘﻪ ﻧﺎﺯﮎ ﺑﺪﻧﯽ ﺭﺍ ﺑﺪﻧﯽ ﺭﺍ
ﺑﻠﺒﻞ ﺯ ﺗﻮ ﺁﻣﻮﺧﺘﮧ ﺷﯿﺮﯾﮟ ﺳﺨﻨﯽ ﺭﺍ ﺳﺨﻨﯽ ﺭﺍ

پھولوں نے نازک بدنی آپ سے سیکھی
بلبل نے اپنی زبان کی مٹھاس آپ سے سیکھی

Flower has learnt tender-being from your face,
And nightingale has learnt from you the sweet words

ﮨﺮ ﮐﺲ ﮐﮧ ﻟﺐ ﻟﻌﻞ ﺗﺮﺍ ﺩﯾﺪﮦ ﺑﮧ ﺩﻝ ﮔﻔﺖ
ﺣﻘﺎ ﮐﮧ ﭼﮧ ﺧﻮﺵ ﮐﻨﺪﮦ ﻋﻘﯿﻖ ﯾﻤﻨﯽ ﺭﺍ

جس نے بھی آپ کے ہونٹوں کو دیکھا تو دل سے کہا
حق ہے کہ کیا خوب یمنی عقیق ہیں

Whoever saw your red lips, praised them
Even the nicely carved carnelian of Yemen

ﺧﯿﺎﻁ ﺍﺯﻝ ﺩﻭﺧﺘﮧ ﺑﺮ ﻗﺎﻣﺖ ﺯﯾﺒﺎ
ﺩﺭ ﻗﺪ ﺗﻮ ﺍﯾﮟ ﺟﺎﻣﺌﮧ ﺳﺮﻭ ﭼﻤﻨﯽ ﺭﺍ

ازل کے درزی یعنی خدا نے آپ کی کیا خوب قامت بنائی ہے
آپ کے تن کو باغ کے سرو کی طرح سجایا ہے

Tailor of the eternity has sewed over your pretty stature
this green dress of garden over your body

ﺩﺭ ﻋﺸﻖ ﺗﻮ ﺩﻧﺪﺍﻥ ﺷﮑﺴﺖ ﺍﺳﺖ ﺑﮧ ﺍﻟﻔﺖ
ﺗﻮ ﺟﺎﻣﻪ ﺭﺳﺎﻧﯿﺪ ﺍﻭﯾﺲ ﻗﺮﻧﯽ ﺭﺍ ﻗﺮﻧﯽ ﺭﺍ

آپ کے عشق میں دانت ٹوٹ گئے اور آپ کی محبت میں
یہ نعت اویس قرنی کوبھی سنا دو

In your love teeth are broken, mere due to love
Make this news reach to Owais of Qarn

ﺍﺯ ﺟﺎﻣﯽ ﺑﮯ ﭼﺎﺭﺍ ﺭﺳﺎﻧﯿﺪ ﺳﻼﻣﮯ
ﺑﺮ ﺩﺭ ﮔﮩﮧ ﺩﺭﺑﺎﺭ ﺭﺳﻮﻝ ﻣﺪﻧﯽ ﺭﺍ

بے چارہ جامی سلام پیش کرتا ہے
رسول مدنی کے دربار پرانوار پر

From poor Jami, reaches salam
to the Holy Kingdom of Prophet (PBUH) of Madina

ﻋﺒﺪﺍﻟﺮﺣﻤٰﻦ ﺟﺎﻣﯽ

 

 

 

Tanam Farsooda Jaan Para Ze Hijraan Ya Rasool Allah

Tanam Farsooda Jaan Para Ze Hijraan Ya Rasool Allah

تنم فرسودہ جاں پارہ ، ز ہجراں ، یا رسول اللہ
دِلم پژمردہ آوارہ ، زِ عصیاں ، یا رسول اللہ

Tanam Farsooda jaa para Ze Hijra, Ya Rasulallah
Dillam Paz Murda Aawara Ze Isyaa, Ya Rasulallah!

یا رسول اللہ آپ کی جدائی میں میرا جسم بے کار اور جاں پارہ پارہ ہو گئی ہے
گناہوں کی وجہ سے دل نیم مردہ اور آورہ ہو گیا ہے

My body is dissolving in your separation And my soul is breaking into pieces, Ya Rasulallah!
Due to my sins, My heart is weak and becoming enticed, Ya Rasulallah!

چوں سوئے من گذر آری ، منِ مسکیں زِ ناداری
فدائے نقشِ نعلینت ، کنم جاں ، یا رسول اللہ

Choon Soo’e Mun Guzar Aari Manne Miskeen Zanaa Daari
Fida-E-Naqsh-E-Nalainat Kunam Ja, Ya Rasulallah!

یا رسول اللہ اگر کبھی آپ میرے جانب قدم رنجہ فرمائیں تو میں غریب و ناتواں
آپ کی جوتیوں کے نشان پر جان قربان کر دوں

When you pass by me Then even in my immense poverty, ecstatically,
I must sacrifice my soul on the impression of your Blessed Sandal, Ya Rasulallah!

ز جام حب تو مستم ، با زنجیر تو دل بستم
ںا می گویم کہ من بستم سخن دا، یا رسول اللہ

Ze Jaame Hubb To Mustam Ba Zanjeere To Dil Bustam
Nu’mi Goyam Ke Mun Hustum Sukhun Daan, Ya Rasulallah!

آپ کی محبت کا جام پی چکا ہوں،آپ کی عشق کی زنجیر میں بندھا ہوں
پھربھی میں نہیں کہتا کہ عشق کی زبان سےشناسا ہوں ، یا رسول اللہ

I am drowned in the taste of your love And the chain of your love binds my heart.
Yet I don’t say that I know this language (of love), Ya Rasulallah!

زِ کردہ خویش حیرانم ، سیہ شُد روزِ عصیانم
پشیمانم، پشیمانم ، پشیماں ، یا رسول اللہ

Ze Kharda Khaish Hairaanam Siyaa Shud Roze Isyaanam
Pashemaanam, Pashemaanam, Pashemaanam, Ya Rasulallah!

میں اپنے کیے پر حیران ہوں اور گناہوں سے سیاہ ہو چکا ہوں
پشیمانی اور شرمند گی سے پانی پانی ہو رہا ہوں ،یا رسول اللہ

I am worried due to my misdeeds; And I feel that my sins have blackened my heart, Ya Rasulallah!
I am in distress! I am in distress! I am in distress! Ya Rasulallah!

چوں بازوئے شفاعت را ، کُشائی بر گنہ گاراں
مکُن محروم جامی را ، درا آں ، یا رسول اللہ

Choon Baazoo’e Shafaa’at Raa Khushaa’I Bar Gunaagara
Makun Mahruume Jaami Raa Daraa Aan, Ya Rasulallah!

روز محشر جب آپ شفاعت کا بازو گناہ گاروں کے لیے کھولیں گیں
یا رسول اللہ اُس وقت جامی کو محروم نہ رکھیے گا

Ya Rasulallah! When you raise your hands to intercede for the sinners,
Then do not deprive Jami of your exalted intercession.

http://tune.pk/video/3044691/tanam-farsooda-jaan-para-zulfiqar-ali#

مولانا عبدالرحمن جامی

Molana Abdur Rehman Jami

Naseema Janib e Bat-HA Guzar Kun

Naseema Janib e Bat-hA Guzar Kun
Ze Ehwalam Muhammad Ra Khabar Kun

نسیما ! جانب بطحا گزر کن
ز احوالم محمد را خبر کن

اے صبا بطحا کی طرف چل
میرے احوال حضورؐ کو سنا

O morning breeze! set out towards Bat’haa,”
Inform Muhammad of my plight

ببریں جانِ مشتاقم بہ آں جا
فدائے روضہ خیر البشر کُن

میری بے تاب جان کو اُس جگہ لے جا
تا کہ یہ حضور کے روضہ اقدس پر نثار ہو جائے

Take me to that place so that
I sacrifice my life at the shrine of Muhammad (best of mankind)

توئی سلطان عالم یا محمد
زروئے لطف سوئے من نظر کن

یا رسول اللہ آپ ہی دونوں جہان کے سلطان ہیں
آپ نگاہ کرم مجھ پر ڈالیں

Muhammad ; You, who are the Emperor of both worlds
Cast your graceful, blessed glance towards me

مشرف گرچہ شد جامی زلطفش
خدایا ! ایں کرم با ر دگر کن

جامی اگرچہ آپؐ کے لطف سے محظوظ ہو گیا
یا اللہ یہ کرم بار بار ہو

Although you have showered your grace on Jami
In God’s name, grant him this favor once again.

مولانا عبدالرحمن جامی
Molana Abdur Rehman Jami