Jahan Bhar Ke Haseenon Se Haseen Tar Ae Haseen Tum Ho

Jahan Bhar Ke Haseenon Se Haseen Tar Ae Haseen Tum Ho
Jamal e Zaat Ho , Noor Elahi al Aalameen Tum Ho

جہاں بھر کے حسینوں سے حسیں تر اے حسیں تم ہو
جمال ذات ہو، نور الہ العالمیں تم ہو

گنہگاران امت کا سہارا بالیقیں تم ہو
کرم ہو، فضل ہو اور رحمت اللعالمیں تم ہو

بہ جسم ظاہری زِندہ، نبی آخریں اور غیب کے عالم
ہو اُمی ظاہراً پر حامل علم مبیں تم ہو

ہو محو ہم کلامی باالمشافہ اور بے پردہ
کہ عین وصل میں بینائےذات العالمیں تم ہو

مری جانِ تمنّا ہو، مرا مقصد مرا حاصل
مرا علم الیقیں، عین الیقیں، حق الیقیں تم ہو

نقاب رخ الٹ دو اے سرور جان مشتاقاں
متاع عاشقاں ہو آرزوئےمخلصیں تم ہو

نگاہے کن بہ خستگان ملت بیضا
امیر کارواں، منزل رسا، کار آفریں تم ہو

سلام اے رہبر دوراں! سلام اے مرکز ایماں
سلام اے حامل قرآں! کہ خوددین متیں تم ہو

سلام اے کار ساز و دستگیر ناقص و کامل
طبیب ہر مرض ، چارہ گر قلب حزیں تم ہو

سلام اے جان عشاقاں، سلام اے روح جاں بازاں
منور کر دو دل مرا کہ نور اولیں تم ہو

سلام اے شاہکار حق! سلام اے پیکر رحمت
سلام از خاورعا جز کہ میرے بس تمہیں تم ہو

خاورسہروردی
Khawar Soharwardy

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *