Yaar Ko Hum Ne Ja Baja Daikha

Yaar Ko Hum Ne Ja Baja Daikha
Kahin Zaahir Kahin Chhupa Daikha

یار کو ہم نے جا بجا دیکھا
کہیں ظاہر کہیں چھپا دیکھا

کہیں ممکن ہوا کہیں واجب
کہیں فانی کہیں بقا دیکھا

کہیں وہ بادشاہِ تخت نشیں
کہیں کاسا لیئے گدا دیکھا

کر کے دعویٰ اناالحق کا
برسر دار وہ کھنچا دیکھا

کہیں وہ در لباسِ معشوقہ
بر سر ناز و ادا دیکھا

صورت گل میں کھلکھلا کہ ہنسا
شکلِ بلبل میں چہچہا دیکھا

کہیں عابد بنا کہیں زاہد
کہیں رندوں کا پیشوا دیکھا

کہیں عاشق نیاز کی صورت
سینہ بریان و دل جلا دیکھا

Hazrat Shah Niaz
حضرت شاہ نیاز 

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

You may use these HTML tags and attributes: <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <strike> <strong>